جسٹس آصف سعید کھوسہ نے اپنے ریمارکس پر معذرت کر لی

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے اپنے ریمارکس پر معذرت کر لی

اسلام آباد:سپریم کورٹ میں پاناما لیکس کیس کی سماعت کے دوران جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ مجھے گزشتہ روز آرٹیکل 62 اور 63 پر آبزرویشن نہیں دینی چاہیے تھی۔

پاکستان ٹرائب ڈاٹ کام کےمطابق جسٹس آصف سعید کھوسہ کا کہنا تھا کہ مجھے اپنے الفاظ پر ندامت ہے میں اپنے کل کے الفاظ واپس لیتا ہوں۔

یاد رہے گزشتہ سماعت کے دوران انہوں نے نعیم بخاری کی جانب سے وزیر اعظم کو نااہل کرنے کی استدعا پر ریمارکس دیے تھے کہ اگر آرٹیکل 62 اور63 لگایا تو پارلیمنٹ میں سراج الحق کے علاوہ کوئی اور نہیں بچے گا ۔

پاناما لیکس کیس کی گزشتہ سماعت کے دوران پی ٹی آئی وکیل کی استدعا پر ریمارکس دیتے ہوئے جسٹس آصف سعید کھوسہ کا کہنا تھا کہ  بخاری صاحب آرٹیکل 62 اور 63 آپکے موکل پر بھی لاگو ہو سکتا ہے۔

پاناما کیس کی سماعت کے دوران جسٹس آصف سعید کھوسہ کے ریمارکس کو سوشل میڈیا پر تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا تھا۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *