دنیا کا وہ ملک جہاں ہر سال کئی کلو سونا گٹروں میں بہا دیا جاتا ہے

دنیا کا وہ ملک جہاں ہر سال کئی کلو سونا گٹروں میں بہا دیا جاتا ہے

: سوئٹزرلینڈ میں لگتا ہے کہ لوگ اتنے زیادہ امیر ہیں کہ ہر سال کروڑوں روپے کا سونا گٹر میں بہا دیتے ہیں، جی ہاں واقعی سوئٹزرلینڈ میں ہر سال 43 کلو گرام سونا گٹر کا حصہ بن جاتا ہے۔

یہ انکشاف سوئس سائنسدانوں نے ایک تحقیق کے دوران کیا۔

یہ بھی جانیں: ایجوکیٹڈ، ان پڑھ یا برابر: کس جوڑے کی زندگی اچھی گزرتی ہے؟

سوئس فیڈرل انسٹیٹوٹ آف اکیوٹک سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کی تحقیق میں بتایا گیا کہ یہ سونا ویسٹ ٹریٹمنٹ پلانٹ سے گزر کر گٹروں کا حصہ بن جاتا ہے۔

یاد رہے کہ اس وقت دنیا بھر میں سونے کی مجموعی پیداوار کا ستر فیصد حصہ سوئس ریفائنریز سے ہو کر گزرتا ہے۔

مزید جانیں: انسان بوڑھا نہیں ہوتا مجلس اسے بوڑھا بنا دیتی ہے، نہایت دلچسپ حکایت

سائنسدانوں نے یہ بھی دریافت کیا کہ سونے کا یہ ضیاع ماحولیات کے لیے تو کوئی خطرہ نہیں پیدا کرتا اور اس سونے کا حصول بھی آسانی سے ممکن نہیں، مگر اس کے نتیجے میں کچھ مقامات سونے سے ضرور جگمگانے لگتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: گرفتار فرد پر تشدد، آئین پاکستان کیا کہتا ہے؟

اس کی وجہ سونے کا کسی ایک جگہ زیادہ مقدار میں جمع ہوجانا ہے مگر اس سونے کو واپس حاصل کرنے کا خرچہ بہت زیادہ ہوسکتا ہے۔

سونے سے ہٹ کر ہر سال سوئٹزر لینڈ میں تین ہزار کلوگرام چاندی کو بھی گٹر میں بہا دیا جاتا ہے، اس تحقیق کے دوران سوئٹزرلینڈ بھر میں 64 ویسٹ ٹریٹمنٹ پلانٹس کا جائزہ لیا گیا۔

پاکستان ٹرائب کی خبریں/ویڈیوز/بلاگز حاصل کرنے کے لیے واٹس ایپ پر ہمارے ساتھ شامل ہوں

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *