ہم نے جعلی شناختی کارڈزپرتوجہ دی،چوہدری نثار

ہم نے جعلی شناختی کارڈزپرتوجہ دی،چوہدری نثار

اسلام آباد: وفاقی وزیر داخلہ چوہدری ںثار کا کہنا ہے کہ حکومت نے سنگین بے ضابطگیوں کو روکنے اور معاملات کو بہتر بنانے کے لئے جعلی شناختی کارڈز کے معاملے پر بہت توجہ دی۔

پاکستان ٹرائب کے مطابق اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ پاکستان کے پاسپورٹ اسمگلنگ میں استعمال ہوتے رہے اور گزشتہ حکومت نے صرف 500 شناختی کارڈاورچندپاسپورٹ منسوخ کیے۔

پریس سے خطاب کرتے ہوئے چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ گزشتہ تین سالوں میں ہم نے ساڑھے چار لاکھ شناختی کارڈ بلاک کیے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ حکومتوں نے دیدہ دلیری سے غیر ملکیوں کو پاکستانی شناختی کارڈ اور پاسپورٹ جاری کیے۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ میری حکومت میں تین مہینے میں 9 کروڑ غیر رجسٹرڈ سمیں بلاک کی گئیں ۔

اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ شوکت عزیز حکومت میں جعلی شناختی کارڈز کا کاروبار بہت چلا۔ ان کا کہنا تھا کہ ملا منصور کا شناختی کارڈ 2005 میں بنایا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ بیرون ملک دہشت گردی کے الزام میں پکڑے گئے افراد پاکستانی نہیں تھے لیکن جعلی پاکستانی شناختی کارڈ ہونے کی صورت میں پاکستان کی بدنامی ہوتی رہی۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ یہ پاسپورٹ کسی کی ملی بھگت سے ہی بنے ہوں گے۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی شناختی کارڈاور پاسپورٹ دہشت گردوں کے ہاتھ میں جارہےہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ 6ماہ کے اندر شناختی کارڈز کی ازسرنو تصدیق کا کام مکمل ہو گیا۔ اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ سال 2011 سے پہلے ازسرنو تصدیق کی کبھی کوشش ہی نہیں ہوئی۔

جعلی شناختی کارڈز کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ایجنسی کی رپورٹ پر شناختی کارڈ بلاک ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2011 سے پہلے صرف 26 شناختی کارڈ بلاک ہوئے۔

ان کا کہنا تھا کہ جو شناختی کارڈ غیرضروری طورپربلاک ہوئےوہ بحال ہوجائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے3سالوں میں 32ہزار500 پاسپورٹ  اورساڑھے چارلاکھ جعلی شناختی کارڈز بلاک کیے۔

ان کا کہنا تھا کہ 18 رکنی کمیٹی بنارہاہوں جس کا میں نے قومی اسمبلی میں وعدہ کیاتھا۔ چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ پاسپورٹ منسوخی پر بہت ساروں کو تکلیف ہوئی لیکن میں اس پر معذرت خواہ ہوں، غیر ضروری بلاک ہونے والے کارڈز بحال کر دیے جائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ٹھیک کام کرنا مشکل ہی نہیں ناممکن بھی ہے۔ جن کے شناختی کارڈ غلط بلاک کیے،ان کے لیےکمیٹی بنارہےہیں۔

 

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *