سمندر کے قریب رہنے والوں کے لئے خوشخبری

سمندر کے قریب رہنے والوں کے لئے خوشخبری

لندن: ایک نئی ریسرچ کے مطابق سمندر بیماریوں سے شفایابی کی صلاحیت رکھتا ہے اور اس کی وجہ اس میں پائے جانے والے منرلز ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سمند کا پانی دریا اور جھیلوں کے پانی سے مختلف اثرات رکھتا ہے کیوں اس کے پانی میں سوڈیم،کلورائیڈ،سلفائیٹ،میگنیشم اور کیلشیم کافی مقدار میں پائے جاتے ہیں۔

اسی وجہ سے سمندر کا پانی جلد کی بیماریوں،ایگزیما اور پمپل وغیرہ کو ختم کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔

سمندر میں نمک کی زیادہ مقدار ایک اینٹی سیپٹک کا کام کرتی ہے اور اسی وجہ سے بہت سے ڈاکٹرز اپنے مریضوں کو سی سائیڈ جانے کا مشورہ دیتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سمندر کا پانی میڈیکل مقاصد کے لئے استعمال کیا جاتا ہے جسے تھیلاسو تھراپی کہا جاتا ہے اور جو لوگ سمندر کے قریب رہتے ہیں انہیں چائیے کہ وہ ضرور اس سے فائدہ اٹھائیں۔

اس کے علاوہ جو افراد سمندر کے قریب نہیں رہتے انہیں بھی چائیے کہ کم از کم سال میں ایک بار چھٹیوں وغیرہ میں ضرور کسی ساحلی شہر کا رخ کریں اور اس کی شفایا خصوصیات سے فائدہ اٹھائیں کیونکہ یہ قدرت کی طرف سے ایک منرلز کمبینیشن ہے جو ہر جگہ میسر نہیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *