ناپسندیدہ کالزاور مسیجز کو روکنا اب ممکن ہوگا

ناپسندیدہ کالزاور مسیجز کو روکنا اب ممکن ہوگا

اسلام آباد: اسمارٹ فون یا عام موبائل فون آپ کی ذاتی ڈیوائس ہے جب کہ آپ کا نمبر آپ کی شناخت،ایسے میں اہم مسئلہ اس وقت سامنے آتا ہے جب کوئی کال یا میسج کے ذریعے تنگ کرے۔ یقینا یہ ایک بڑا مسئلہ تھا لیکن اب ایسا نہیں رہے گا۔

ان ناپسندیدہ کالرز اور میسجز سے نمٹنے کا سب سے آسان طریقہ یہ ہے کہ انہیں بلاک کر دیا جائے۔ یہ کیسے ہوگا آئیے ہم بتاتے ہیں۔

اس حوالے سے موبی لنک جاز کی جانب سے بہت آسان طریقہ وضع کیا گیا ہے،ان کی سروس سے آسانی سے مستفید ہوا جا سکتا ہے مثال کے طور پر اگر آپ کسی کالر کو بلیک لسٹ کرنا اور صرف اپنے کنٹیکٹ میں موجود جاننے والوں کے نمبر سے ہی رابطہ رکھنا چاہتے ہیں تو اس طریقے سے یہ ممکن بنایا جا سکتا ہے۔

ناپسندیدہ نمبر کو بلیک لسٹ میں ایڈ کریں،اسے چیک کریں۔

اسے ریموو کردیں۔
ان سبسکرائب کریں۔
اس کالر کی ٹیون تبدیل کریں۔

بلیک لسٹ ہسٹری کو کال کریں اور ایک نظر دیکھ لیں،سبسکرائب کے لئے سب لکھ کر 420 ملائیں اور ان سبسکرائب کے لئے ان سب لکھ کر 420 ملائیں یا کال کر لیں۔

سبسکرائب کے لئے ٹیلی نار کا بلیک لسٹ کا طریقہ بھی تقریبا جاز کی طرح ہی ہے،اسی طریقے سے آپ کسی نمبر کو بلیک یا وائٹ لسٹ کر سکتے ہیں۔

سبسکرائب کے لئے اسٹار 420 ہیش اور ان سبسکرائب کے لئے بھی یہی ڈائل کریں۔

یو فون صارفین ایسے ناپسندیدہ کالرز کو بلیک لسٹ کرنے کے لئے سبکسرائب 420 اور ان سبسکرائب کے لئے بھی 420 ملائیں اور مدد کے لئے ایچ ملائیں۔

وارد صارفین وارد بلیک لسٹ کے ذریعے ملکی اور غیر ملکی ناپسندیدہ کالز کو بلاک کر سکتے ہیں۔اس کے علاوہ وارد نے اپنے صارفین کے لئے ایک اور سہولت بھی مہیا کی ہے جو ناپسندیدہ کالر کے بارے میں الرٹ جاری کرتی ہے۔

سبسکرائب کے لئے سب 420 اور ان سبسکرائب کے لئے ان سب 420 ڈائل کریں۔

زونگ نے بھی اپنے صارفین کے لئے بالکل ایسی ہی سروس مہیا کی ہے جس سے آسانی سے استعفادہ کیا جاسکتا ہے۔

سبسکرائب کے لئے سب لکھ کر 420 ملائیں یا کال کریں اور ان سبسکرائب کے لئے ان سب لکھ کر 420 ملائیں یا کال کریں۔

یاد رہے کہ پاکستان میں فعال تمام ٹیلی کام کمپنیز کی جانب سے فراہم کی جانے والی ان تمام سروسز کو استعمال کرنے پر طے شدہ چارجز لاگو ہوں گے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *