چین کا مقابلہ،امریکا اور بھارت نے نیا معاہدہ کر لیا

چین کا مقابلہ،امریکا اور بھارت نے نیا معاہدہ کر لیا

واشنگٹن: عالمی اور علاقائی سطح پر حالات کو اپنے حق میں لانے کی خواہش کے تحت مختلف معاملات میں پیش رفت جاری ہے۔ ایسے ہی ایک معاملے میں بھارت اور امریکا کے درمیان فوجی تعاون کے معاہدے پر دستخط ہوئے ہیں جس کے تحت دونوں ممالک ضرورت پڑنے پر ایک دوسرے کے فوجی اڈے استعمال کرسکیں گے ۔

امریکا اور بھارت کے درمیان نئے معاہدے کا اعلان بھارتی وزیر دفاع منوہر پاریکر اور امریکی سیکریٹری دفاع ایش کارٹر کے درمیان ملاقات کے بعد جاری مشترکہ اعلامیے میں کیا گیا ۔

یاد رہے کہ امریکی سیکرٹری دفاع ایش کارٹر نے ہی پاکستان کو کولیشن سپورٹ فنڈ کی مد میں دی جانے والی رقم جاری کرنے کے اجازت نامے پر دستخط نہیں کیا تھا۔

امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون میں ہوئی ملاقات کے بعد جاری اعلامیے کے مطابق دونوں ممالک نے درمیان دفاعی تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق کیا ہے ۔

معاہدے کے تحت امریکا اور بھارت ضرورت پڑنے پر ایک دوسرے کے بری،بحری اور فضائی اڈے استعمال کرسکیں گے۔ دونوں ملکوں کی جانب سے معاہدے کا ظاہری مقصد بیان کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ ان اڈوں کا استعمال رسد پہنچانے اور فوجی ساز و سامان کی مرمت کے مقاصد کیلئے کیا جائے گا۔

دوسری جانب واقعہ کو رپورٹ کرنے والی ایک اہم غیر ملکی خبر ایجنسی نے اپنے تبصرے میں کہا کہ اس فوجی تعاون کا مقصد خطے میں چین کی بحری پیش رفت کا مقابلہ کرنا ہے۔

اس سے قبل ملاقات کے دوران اس بات کا اعادہ بھی کیا گیا کہ بھارت اور امریکا کے درمیان فوجی تعاون دونوں ممالک کے دیرینہ مفادات اور خطے میں امن اور سلامتی کے لیے ہے ۔

امریکی سیکریٹری دفاع ایش کارٹر نے اس موقع پر کہا کہ امریکا،بھارت کی نیوکلیئر سپلائر گروپ میں شمولیت کی حمایت کرتا ہے ۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *