“فلسطین گوگل کے نقشے میں نہیں رہا”

“فلسطین گوگل کے نقشے میں نہیں رہا”

نیویارک:سرچ انجن گوگل نے دنیا کے نقشے سے فلسطین کی ریاست کو نکال دیا ہے جس کے باعث اسے کڑی تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

دی نیوز ٹرائب کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق گوگل نے دنیا کے نقشے سے فلسطین کو نکال دیا ہے۔

فلسطینی جرنلسٹ فورم نے دنیا کے نقشے سے فلسطین کو نکالے جانے پر گوگل کی شدید مذمت کی ہے اور کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

فورم نے اس اقدام کو عالمی اصولوں اور ضوابط کے خلاف قرار دیتے ہوئے گوگل کو اس فیصلے کو واپس لینے پر زور دیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فلسطینی جرنلسٹ فورم کی جانب سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اس اقدام کا مقصد فلسطینی عوام کی قابض اسرائیل سے آزادی کیساتھ ساتھ تاریخ، جغرافیہ کو مسخ، فلسطینیوں اور عربوں کے ساتھ ساتھ پوری دنیا کے دماغ سے محو کرنے کی ناکام کوشش ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ گوگل کا گزشتہ ماہ 25 جولائی کو دنیا کے نقشے سے فلسطین کا نام ہٹانے کا فیصلہ اس اسرائیلی سازش کا حصہ ہے جس کے مطابق وہ یہودی نسلوں کیلئے اسرائیل کو قانونی ریاست قرار دے کر اس نام کے ذریعے فلسطینیوں کا وجود ہمیشہ کیلئے مٹانا چاہتا ہے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *