الیکشن کمیشن کے ممبران کا انتخاب ہو گیا

الیکشن کمیشن کے ممبران کا انتخاب ہو گیا

اسلام آباد:وفاقی دارالحکومت میں وزیرخزانہ اسحاق ڈار اور اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے الیکشن کمیشن کے ممبران کی تقرری کے حوالے سے ملاقات کی۔

دی نیو زٹرائب کے نمائندہ اسلام آباد کے مطابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار اور پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما اور اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ میڈیا سے بات کر رہے تھے۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے اپوزیشن سربراہ خورشید شاہ نے کہا کہ الیکشن کمیشن کے ممبران کے انتخاب اور تعیناتی کے حوالے سے حکومت اور اپوزیشن کے مابین ہونے والی ملاقاتیں قومی ذمےداری اور امانت تھی،کوشش تھی کہ امانت میں خیانت نہ ہو۔

خورشید شاہ نے میڈیا کو بتایا کہ اب بیوروکریٹ اور ٹیکنوکریٹ بھی الیکشن کمیشن کے رکن بن سکتے ہیں۔

اپوزیشن رہنما نے کہا کہ تین نام اپوزیشن اور تین نام حکومت نے دیے ہیں جن پر باہمی صلاح مشورے سے فیصلہ کیا جائے گا۔

خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ ماضی کی طرح غلط فیصلہ کرنے سے اجتناب کیا ہے اس لئے الیکشن کمیشن ممبران کے نام ڈسکشن کے بعد کمیٹی میں جائیں گے۔

انھوں نے کہا کہ دنیا میں فرشت نہیں رہتے پھر بھی ہم  نے بہت کوشش سے صاف ستھرے لوگوں کا نام منتخب کرنے کی کوشش کی ہے۔

اس موقع پر اپوزیشن لیڈر کے ہمراہ موجود وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے صحافیوں کو بتایا کہ 25 جولائی کو سر بمہر لفافے کھلیں گے تو پتہ چلے گا کہ کون سے نام ہیں۔

وزیرخزانہ اسحاق ڈار نے بتایا کہ وزیراعظم کے کہنے پر خورشید شاہ سے کئی مذاکرات کئے ہیں جس کے بعد طے یہ پایا کی الیکشن کمیشن ممبران کے لئے چاروں صوبوں سے تین تین نام آئیں گے پھر فہرستیں بنا کر کمیٹی کو بھیج دی جائیں گی۔

انھوں نے میڈیا کو بتایا کہ الیکشن کمیشن سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس پیر کو ساڑھے دس بجے ہو گا کچھ دیر میں میٹنگ کے لئے نوٹیفکیشن بھی جاری ہو جائے گا۔

اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ آئین کی 22 ویں ترمیم میں رہتے ہوئے 45 دن میں کسی بھی آسامی کو پر کرنا لازمی ہوتا ہے ہم نے اپنا کام پورا کر لیا ہے اب 25 جولائی کو ان ناموں پر مشاورت کی جائے گی۔

یاد رہے کہ اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ اور وزیر خزانہ اسحاق ڈار الیکشن کمیشن کی تقرری اور انتخاب کے حوالے سے ہونے والی میٹنگ کے بعد میڈیا سے بات چیت کر رہے تھے۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *