ذاکر نائیک کے خلاف مقدمہ درج ہونے کا امکان

ذاکر نائیک کے خلاف مقدمہ درج ہونے کا امکان

ممبئی: معروف اسلامی اسکالر اور بین المذاہب تقابل کے موضوع پر اتھارٹی کا درجہ رکھنے والے ڈاکٹر ذاکر نائیک کے خلاف بھارت میں مقدمہ درج کرنے کی تیاری شروع کر دی گئی ہے۔

دی نیوز ٹرائب ڈاٹ کام کے مطابق معروف اسکالرذاکرنائیک کے خلاف تقریروں کے ذریعے دہشت گردی کو فروغ دینے کے الزام پر مقدمہ درج کئے جانے کا امکان ہے۔

مقامی میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ مقدمہ کے معاملے پر بھارتی وزارت داخلہ قانونی مشاورت بھی کر رہی ہے۔

بھارتی وزارت داخلہ کے مطا بق ذاکرنائیک کی تقاریرمیں قابل اعتراض اورتشدد کی حمایت میں موادملا ہے جس کیلئے ذاکر نائیک کی سیکڑوں ویڈیوز کو بھی دیکھا گیا ہےاور اس پر قانونی مشاورت جاری ہے ۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ بنگلہ دیشی دارالحکومت میں ایک کیفے پر حملہ کے بعد ڈاکٹر ذاکر نائیک کو انتہا پسند ہندو تنظیموں کی جانب سے خصوصی پروپیگنڈا کا ہدف بنا رکھا گیا ہے۔

بھارتی میڈیا بھی اپنی رپورٹس میں یہ دعوی کر چکا ہے کہ ڈاکٹر ذاکر نائیک اپنی تقریروں سےحاضرین کو تشدد پراکساتے رہے ہیں۔

پیش ٹیلی ویژن اور اسلامک ریسرچ فائونڈیشن کے بانی ڈاکٹر ذاکر نائیک دنیا بھر میں بین المذاہب تقابل کے حوالے سے اپنے پروگرامات کیلئے معروف ہیں۔

ویب ڈیسک

یہ پاکستان ٹرائب کا آفیشل ویب ڈیسک اکاؤنٹ ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *