کرونا وائرس کی عالمی سطح پر جنگ

ملک میں بھر میں کرونا کآ خوف و  ہراس عوام کو درپیس مسا ئل  اور ان کا سدباب کس حد تک کیا جا رہا ہے . یہ سوال ہر کسی کی زبان پر عام ہنے. اس کی لئنے حکومتی پالیسی کیا ہیے ان سب سوالوں کا ایک ہی جواب ہنے جس ملک میں ریاست کا حکمران آ نکھ بند کر کے فیصلہ کرتا ہو اور عوام بھی بے حسی کا مضاہرہ کرے تو آپ سمجھ سکتے ہیں نتائج کیا ہوں گے . آج دنیا بھر میں نفسہ نفسی کا دور ہے. ہر کوئی اس کرونا وائرس سنے ز ندگی کی جنگ لڑ رہا ہنے . لیکن ہمارے ملک میں اس کو بلکل بھی سنجیدہ نہیں لیا جا رہا. ملک بھر میں لوگ ویسے ہی گھوم پھر رہے ہیں روز مرہ کے معمول کی کم میں کوئی فرق نہیں آ یا.
بات اہم یہ ہنے کس طرح اس وبا پر قابو پائیں اب زائرین کو اجازت دی گیی ، ملک میں ٹرنپورٹ سی پابندی ہٹا لی گیی شہر ہیں تو وہ مکمل بند نہیں ہیں لوگوں کی آ مدرفت جاری ہے. ان سب میں سب سے بے خبر ہماری چھوٹی  عوام ہہنے جس کو یہ بھی نہیں پتہ کہ یہ بیماری ہنے کیا؟ اس کے بارے میں ان کو کچھ پتہ نہیں اور نہ ہی تاحال ابھی تک دھہئی علاقوں میں کوئی ایسی پِش رفت سامنے آ ئی  ہے . ایک طرح سے دیکھا جاتے تو میرے خیال سے یہ سمجھ لینا کہ گاؤں کا خالص ماحول اور تازہ خوراک کا وہاں  کی آبادی کا امیون سسٹم کافی مضبوط ہے. ہہ بات ڈل کو تسلی دینے کی حد تک تو ٹھیک لگتی یے.
جب تک ملک میں مکمل طور پر احتیاطی تدابیر  کا نفاذ نہیں ہوگا ہم لوگ اس سے جان نہیں چھڑوا سکتے. اگر ہر کویی اپنا ہی الّو سیدھا کرنے میں لگ جاتے تو پھر تو اس مرض سنے جان چروانہ
مشکل ہے . اس کے لیے ملک بھر میں باہر میں فضائی حدود میں پابندی لگائی جانے. اگر ہم اس سوچ میں پڑ جائیں کہ مزدور کہاں سنے کھاے کا تو ہہ کہنا بھی منفی نہیں ہوگا اگر مرض خدا نہ خواسطنہ پھیل گیا تو پھر یہ سوچیں امیر ، متوسط طبقہ اور مزدور یہ سب کہاں سے کھائیں گے. ابھی جن اقدامات کو ذاتی مفادات کی بنہ پر سنجیدہ نہیں لیا جا رہا ہے وہ ہی مشکلات کی وجہ نہ بن جائیں. ملک میں کرونا وائرس سے متاثرین کی تعداد روز بروز بڑھتی جا رہی ہے.

Video

Subscribe PakistanTribe’s YouTube Channel